Thread Rating:
  • 70 Vote(s) - 1.79 Average
  • 1
  • 2
  • 3
  • 4
  • 5
کبھی کسی کو مکمل جہاں نہیں ملتا
#1
Star 
کبھی کسی کو مکمل جہاں نہیں ملتا
کہیں زمیں کہیں آسماں نہیں ملتا

تمام شہر میں ایسا نہیں خلوص نہ ہو
جہاں امید ہو اس کی وہاں نہیں ملتا

کہاں چراغ جلائیں کہاں گلاب رکھیں
چھتیں تو ملتی ہیں لیکن مکاں نہیں ملتا

یہ کیا عذاب ہے سب اپنے آپ میں گم ہیں
زباں ملی ہے مگر ہم زباں نہیں ملتا

چراغ جلتے ہیں بینائی بجھنے لگتی ہے
خود اپنے گھر میں ہی گھر کا نشاں نہیں ملتا
Reply
#2
Smile 
niCe one
Reply
#3
great nice post
Reply


Possibly Related Threads...
Thread Author Replies Views Last Post
Sad اب کے ہم بچھڑے تو شاید کبھی خوابوں میں ملیں aneesrao73 0 1,198 21-05-2014, 08:48 PM
Last Post: aneesrao73

Forum Jump:


Users browsing this thread: 1 Guest(s)